’را‘کے گرفتار ایجنٹ کا کراچی اور بلوچستان میں فورسز پر حملوں میں ملوث ہونے کا اعتراف

Cnn-pointکل بھوشن یادیو کے ساتھی اب بھی بلوچستان اور کراچی میں موجود ہیں ، ابتدائی رپورٹ 
اسلام آباد: بلوچستان سے گرفتارہونے والے بھارتی خفیہ ایجنسی را کے ایجنٹ کل بھوشن یادیو نے تفتیش کے دوران مزید انکشافات کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کی پاکستان میں تعیناتی بھارت کی جانب سے کی گئی اور کراچی اور بلوچستان میں بدامنی اس کا سب بڑا ہدف تھا ۔
بلوچستان سے گرفتار ہونے والے بھارتی خفیہ ایجنسی را کے ایجنٹ کل بھوشن یادو سے تفتیش کرنے والی تحقیقاتی ٹیم نے حکومت کو ابتدائی رپورٹ پیش کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ را ایجنٹ نے بلوچستان اور کراچی میں بنائے گئے نیٹ ورک سے متعلق انکشافات کے علاوہ دہشت گردوں کے لئے کی گئی فنڈنگ کی تفصیلات بھی بتا دی ہیں اور اس بارے میں را ایجنٹ کا کہنا تھا کہ وہ پاکستان میں دہشت گردوں، علیحدگی پسندوں اور فرقہ واریت کے فروغ کےلئے فنڈنگ کرتا رہا ہے ۔
بھارتی خفیہ ایجنسی را کے گرفتار ہونے والے ایجنٹ کل بھوشن یادیو نے تفتیش میں مزید انکشافات کرتے ہوئے کہا ہےکہ بھارت کی جانب سے پاکستان میں اس کی باقاعدہ تعیناتی کی گئی اور اس کا سب بڑا ہدف کراچی اور بلوچستان میں بدامنی پھیلانا تھا ۔ دہشت گردی کے واقعات میں مقامی دہشت گردوں کے علاوہ افغان شہریوں کو بھی استعمال کیا جبکہ اس کے دیگر ساتھی کراچی اور بلوچستان میں اب بھی موجود ہیں ۔ جن کے ذریعے وہ کراچی اور بلوچستان میں سیکیورٹی فورسز پر حملے کرنے میں ملوث رہا ہے ۔ رپورٹ میں را افسرکے اہداف اورکی گئی کارروائیاں بھی شامل ہیں ۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point