مرحومہ نوشین احمد بٹ کو اٹالین نیشنیلٹی دینے کا اعلان

cnnpointروم ( بول انٹرنیشنل) اطالوی وزیر داخلہ انجلینو الفانو  نے مودینا میں بھائی کے ہاتھوں قتل ہونے والی نوشین احمد بٹ کو اس کی موت کے بعد اطالوی شہریت دینے کا اعلان کیا ہے۔ گزشتہ جمعہ کو ایک بیان میں وزیر داخلہ نے کہا کہ نوشین نے اٹالین روایات اور اطالوی طرزِ ز ندگی کو اہمیت دی اور اپنی روایات سے بغاوت کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اپنے مرضی سے جینے کا بہادرانہ فیصلہ کرنے پر اطالوی معاشرہ نوشین کے اندازِ فکر کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ اور خصوصی میرٹ کے تحت نوشین کی یاد کو زندہ رکھنے کے لئے اٹالین شہریت پیش کرتی ہے۔

ا ٹالین اخبار کے مطابق یاد رہے کہ نوشین بٹ کو چودہ سال کی عمر میں اس کے والدین 2004 میں پاکستان سے ا ٹلی لائے ۔ ابتدا میں اس پاکستانی فیملی نے بہت اچھی اور پرسکون زندگی گزاری، نوشین جب بیس سال کی ہوئی تو والدین نے اس کی شادی پاکستان میں ایک پاکستانی لڑکے سے کرنے کی بات شروع کی تو نوشین نے یہ کیہ کر انکار کردیا کہ جس لڑکے کو میں نے دیکھا تک نہیں میں اس سے شادی نہیں کروں گی، والدین پہلے تو پیار سے سمجھاتے رہے، پھر سختی سے بات کی، لیکن نوشین کسی بھی طرح یہ شادی کرنے کے لئے تیار نہیں تھی۔3 اکتوبر 2010 کو گھر میں پھر اسی بات پر جھگڑا ہوا، جو شدت اختیار کر گیا جس کے نتیجے میں بھائی نے بہن کو گھونسوں اور مکوں سے مار مار کر ہلاک کر دیا۔ بیٹی کو بچانے کے لئے ماں درمیان میں آئی تو نوشین کے باپ نے بیوی کو بھی اسی جگہ قتل کر دیا۔ بعد ازاں اس افسوسناک واقعہ کا کیس عدالت میں چلا تو نوشین کے بھائی کو عدالت نے بیس 20 سال قید کی سزا سنا کر جیل بھیج دیا۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point