پیرس حملوں کا مبینہ ماسٹر مائنڈ اپنے 2 ساتھیوں سمیت ہلاک

CNN-POINTآپریشن میں 5 مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لیا گیا ہے،فوٹو:فائل

پیرس: فرانس کے دارالحکومت پیرس میں پولیس کے سرچ آپریشن کے دوران پیرس حملوں کے مبینہ ماسٹر مائنڈ عبدالحامد اباعود سمیت 3 دہشت گرد مارے گئے جب کہ اس دوران متعدد پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے۔
غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق فرانسیسی پولیس شمالی پیرس کے علاقے سینٹ ڈینس میں سرچ آپریشن کر رہی ہے جہاں جمعے کو ہونے والے حملوں کے مبینہ ماسٹر مائنڈ عبدالحامد اباعود کی موجودگی کی اطلاعات تھیں، آپریشن کے دوران دہشت گردوں کی جانب سے پولیس پر فائرنگ شروع ہوگئی جب کہ متعدد بم دھماکے بھی ہوئے،پولیس کی جوابی فائرنگ میں 2 حملہ آور ہلاک جب کہ ایک خاتون نے اپنے آپ کو بارودی مواد سے اڑا لیا ،مقامی میڈیا کے مطابق آپریشن میں پیرس حملوں کا مبینہ ماسڑ مائنڈ عبدالحامد اباعود بھی مارا گیا۔ حکام کا کہنا ہے کہ آپریشن میں 5 مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لیا گیا ہے اوراس دوران متعدد پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں جنہیں طبی امداد کے لیئے اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔
فرانسیسی میڈیا کے مطابق آپریشن میں فوجی دستے بھی حصہ لے رہے ہیں اور اطراف کے علاقے کو گھیرے میں لے کر ناکہ بندی کردی گئی ہے۔دوسری جانب ان حملوں میں ملوث آٹھ مشتبہ ملزمان میں سے ایک صالح عبدالسلام کی تلاش کے لیے بھی ایک بڑا آپریشن جاری ہے۔
واضح رہے کہ پیرس حملوں کا مبینہ ماسٹرمائنڈ عبدالحامد اباعود جوبیلجیم کا شہری تھا اور اس کے بارے میں خدشہ کی جا رہا تھا کہ وہ اس وقت شام میں موجود ہے۔ مراکشی نژاد عبدالحامد چرچ پر حملوں سمیت کئی وارداتوں میں بھی مطلوب تھا۔جمعے کو پیرس کے مختلف مقامات پر خود کش حملوں اور فائرنگ کے نتیجے میں 130 زائد افراد ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوئے تھے، جس کی ذمہ داری عراق اور شام میں سرگرم شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی تھی۔ حملوں کے بعد سے فرانس میں سیکیورٹی سخت کردی گئی ہے جب کہ دہشت گردوں اور شدت پسند عناصر کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے اور پورے ملک میں مشتبہ افراد کی تلاش میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point