برطانیہ تعلیم حاصل کرنے کے لحاظ سے دنیا کا مہنگا ترین ملک

CNN-POINTلندن: برطانیہ کی آرگنائزیشن فار اکنامکس کو آپریشن اینڈ ڈیولپمنٹ کا کہنا ہے کہ برطانیہ کی یونیورسٹیاں دنیا کی سب سے مہنگی یونیورسٹیاں ہیں۔ رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں تعلیمی اخراجات آسٹریلیا سے دو گنا اور سویزرلینڈ اور اٹلی کے مقابلے چھ گناہ زیادہ ہیں۔ایک سروے کے مطابق 50 ممالک کے تعلیمی اخراجات کے تجزیے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ امریکہ موجودہ دور میںبرطانیہ سے سستی تعلیم فراہم کر رہا ہے۔ انگلینڈ دنیا میں پہلی دفعہ مہنگی تعلیم دینے میں سب سے آگے آیا ہے جبکہ 2012 میں انگلینڈ نے تعلیمی اخراجات میں 9000 یوروز اور تمام یونیورسٹیوں کے اخراجات میں 6000 یوروز کا سالانہ اضافہ ہوتا ہے۔ انگلینڈ کے بعد امریکہ تعلیمی اخراجات میں دوسرے جس کی یونیورسٹیوں کی مجموعی اخراجات 5300 یوروز جبکہ امریکی یونیورسٹی ہاورڈ اور یلے برطانیہ کی یونیورسٹیوں سے زیادہ مہنگی ہیں۔ جاپان تیسرے نمبر پر ہے جہاں تعلیمی اخراجات 3300 یوروز اس کے بعد کینیڈا،کوریا،آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ ہے۔ آسٹریلیا میں اخراجات 2600 یوروز جبکہ اٹلی اور سویزرلینڈ میں تقریبا 1000 یوروز ہے۔ گذشتہ ہوئے سروے کے مطابق برطانیہ تعلیمی اخراجات کے لحاظ سے پانچویں نمبر پر تھا۔ او ای سی ڈی کی رپورٹ کے مطابق 1995 میں برطانیہ سب سے سستی تعلیم مہیا کر رہا تھا اور غریب طالب علموں کی حمایت کر رہا تھا مگر یونیورسٹیوں کی بڑھتے ہوئے اخراجات کی وجہ سے اب غریب طالب علم برطانیہ کی یونیورسٹی میں تعلیم حاصل نہیں کر سکتے۔ رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں پڑھنے والے طالب علم دوسرے ممالک میں پڑھنے والے اپنے ہم جماعتوں سے زیادہ فیس دیتے ہیں جبکہ مختلف یورپین ممالک جیسے کے ڈنکارک،سویڈن اور جرمنی میں یورپی طالب علموں کے لیے تعلیم مفت ہے، نیدرلینڈ میں انگلش کے کورسز کی فیس 1400 یوروز اور ائر لینڈ میں صرف 2100 یوروز ہے۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point