ڈاکٹر عاصم نے 452 ملین روپے کی کرپشن ، زمینوں پر قبضے بھی کیے: تفتیشی رپورٹ

CNN-POINTکراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) ڈاکٹر عاصم حسین نے اپنی وزارت کے ماتحت اداروں میں 452 ملین روپے کی کرپشن کی ہے ۔
تفصیلات کے مطابق نیب کے تفتیشی افسر ضمیر عباسی کی طرف سے احتساب عدالت کے روبرو پیش کی جانے والی تفتیشی رپورٹ میں تہلکہ خیز انکشافات سامنے آئے ہیں۔ تفتیشی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم نے 2010 سے 2012 کے درمیان وزارت پٹرولیم کے ماتحت اداروں میں 452 ملین روپے کی کرپشن کی جبکہ انہوں نے محکمہ زراعت میں بھی کرپشن کی ہے۔ڈاکٹر عاصم نے سوئی گیس کے کنکشنز کے عوض بھی بڑے پیمانے پر رشوت حاصل کی ۔
اس کے علاوہ ڈاکٹر عاصم منی لانڈرنگ میں بھی ملوث رہے ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم کی منی لانڈرنگ کی 50 فیصد ٹرانزیکشنز کی تفصیلات حاصل کرلی گئی ہیں جبکہ باقی کا پتا لگانا ابھی باقی ہے۔

انہوں نے کراچی میں بڑے پیمانے پر سرکاری زمینوں پر قبضے بھی کیے ہیں ۔ نیب کی تفتیش کے دوران ڈاکٹر عاصم نے زمینیں واپس کرنے کی پیشکش کی ہے جبکہ ضیاءالدین ہسپتال کے پارکنگ ایریا کی دوبارہ رجسٹریشن کرانے کی بھی پیشکش کی ہے جس کے بارے میں چیئرمین نیب کو آگاہ کردیا گیا ہے۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point