کانپور کی مشہور جواں سالہ خاتون جج نے وکیل شوہر سے جھگڑے کے بعد پنکھے سے لٹک کر خود کشی کر لی،ہاتھ کی رگیں کٹی ہوئیں ہیں ،ہو سکتا ہے قتل کیا گیا ہو :پولیس کا دعویٰ

cnn-point

اترپردیش بھارتی ریاست اتر پردیش کے ضلع کانپور کی مشہور خاتون جودیشل مجسٹریٹ پرتیبھا گوتم نے پنکھے سے پھندا لگا کرکر خود کشی کر لی ،پرتیبھا کے وکیل شوہر سے جھگڑا ہوا ،ہاتھ کی شہہ رگ بھی کٹی ہوئی ہے ،ابتدائی تحقیق میں خود کشی کا معاملہ مشکوک ہے ،پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد اصل صورتھال سامنے آئے گی ،پولیس کا دعویٰ ۔

بھارتی نجی چینل ’’این ڈی ٹی وی ‘‘ کے مطابق کانپور کی 30سالہ مشہور خاتون جودیشل مجسٹریٹ پر تیبھا گوتم کی لاش ان کے گھر سے پنکھے سے لٹکی ہوئی ملی ، وکیل شوہر کورٹ سے گھر آیا تو اپنی مجسٹریٹ بیوی کی لاش پنکھے سے لٹکی دیکھ کر پولیس کو اطلاع دی جس نے فوری موقع پر پہنچ کر پرتیبھا کی لاش کو اتار ،کہا جا رہا ہے کہ پرتیبھا کے ہاتھ کی رگیں کٹی ہوئیں تھیں اور یہ خود کشی نہیں ہو سکتی بلکہ اسے قتل کیا گیا ہے ،مقامی ایس پی شومین ورما کا کہنا تھا کہ وہ فوری طور پر پرتیبھا کی موت کو خود کشی قرار نہیں دیا جا سکتا ،ایسی خبریں بھی ملی ہیں کہ خاتون جج کا اپنے وکیل شوہر سے سخت جھگڑا ہوا جس کے بعد یہ واقعہ پیش آیا ۔انہوں نے کہا کہ فرانزک ٹیم بھی آ چکی ہے جو کمرے میں موجود اہم ثبوت اکھٹے کر رہی ہے ،جبکہ پرتیبھا کے وکیل شوہر اور رشتہ داروں سے بھی پوچھ گچھ کریں گے اور پوسٹ مارٹم رپورٹ بھی خود کشی یا قتل کے بارے میں اہم کردار ادا کرے گی ۔دوسری طرف پرتیبھا کی موت کی خبر سن کر عدلیہ کے ججز اور شہر کے اعلیٰ افسران موقع پر پہنچ چکے ہیں ۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point