کراچی کے ریجنٹ پلازہ میں آتشزدگی کا حتمی چالان عدالت میں پیش

کراچی: شارع فیصل پر واقع ریجنٹ پلازہ میں آتشزدگی سے متعلق حتمی چالان عدالت میں پیش کردیا گیا ہے۔
کراچی کی مصروف ترین شاہراہ شارع فیصل پر واقع ریجنٹ پلازہ میں گزشتہ برس دسمبر میں لگنے والی آگ سے متعلق پولیس نے حتمی چالان تفتیشی افسر عامر الطاف نے ایڈیشنل اینڈ سیشن جج جنوبی کی عدالت میں جمع کرایا۔
تفتیشی افسر نے چالان میں انکشاف کیا ہے کہ آگ بجھانے کے آلات سےمتعلق ہوٹل انتظامیہ نےغلط رپورٹ جمع کرائی جب کہ سول ڈیفنس ادارے سے بھی ہوٹل میں فائرسیفٹی کا کوئی ریکارڈ نہیں ملا جب کہ ادارے نے فراہم کردہ دستاویزات کی تصدیق بھی نہیں کی۔
اس خبرکوبھی پڑھیں: ہوٹل آتشزدگی چالان میں ذمے دارہوٹل انتظامیہ قرار
تفتیشی افسر نے چالان میں بتایا ہے کہ ریجنٹ پلازہ میں 1994 میں لگایا گیا فائر سیفٹی سسٹم ناکارہ ہوچکا ہے اور آتشزدگی کے وقت ہوٹل کے کنٹرول روم میں فائر سیفٹی سے لاعلم سی سی ٹی وی آپریٹر ہی موجود تھا۔
واضح رہے کہ گزشتہ برس دسمبر میں سانحہ ریجنٹ پلازہ میں 3 خواتین سمیت 12 افراد جاں بحق اور 50 سے زائد افراد زخمی ہوئے تھے۔ اور آتشزدگی سے متعلق مقدمے کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران تفتیشی افسر نے مقدمے کا چالان پیش کردیا، جس میں حادثے کا ذمے دارہوٹل انتظامیہ کو قراردیتے ہوئے ہوٹل مالکان سمیت 5 افراد کو مرکزی ملزم نامزد کیا گیا۔

Editor
Editor
Web Administrator at CNN POINT Admin is the Web Administrator of CNN Point, Admin is the Official Author of CNN Point